ہندوستان کے ایف16 طیارہ مار گرانے کی اب بھی جانچ کر رہا ہے امریکہ

پاکستان کا ایف 16طیارہ محفوظ ، امریکی میگزین کا دعویٰ بھی غلب ثابت

0 173

سرینگر/: پلوامہ حملے کے بعد بالاکوٹ میں ہندوستانی فضائیہ کی کارروائی کے اگلے ہی دن پاکستان نے جواب دینے کے لئے ایف -16 طیارے کا استعمال کیا تھا۔ اسے ہندوستانی فضائیہ نے مار گرایا تھا۔ اس کے بعد ہندوستان نے امریکہ سے تحقیقات کی مانگ کی۔ اس مانگ کے تقریبا دو ماہ بعد پتہ چلا ہے کہ امریکہ اس کے دفاعی سازوسامان کی فروخت کی شرطوں کی خلاف ورزی کرنے اور پاکستان کی طرف سے ہندوستان پر حملہ کے لئے استعمال کی اب بھی جانچ کر رہا ہے۔کرنٹ نیوز آف انڈیا مانیٹرنگ کے مطابق پلوامہ حملے کے بعد بالاکوٹ میں ہندوستانی فضائیہ کی کارروائی کے اگلے ہی دن پاکستان نے جواب دینے کے لئے ایف -16 طیارے کا استعمال کیا تھا۔ اسے ہندوستانی فضائیہ نے مار گرایا تھا۔ اس کے بعد ہندوستان نے امریکہ سے تحقیقات کی مانگ کی۔ اس مانگ کے تقریبا دو ماہ بعد پتہ چلا ہے کہ امریکہ اس کے دفاعی سازوسامان کی فروخت کی شرطوں کی خلاف ورزی کرنے اور پاکستان کی طرف سے ہندوستان پر حملہ کے لئے استعمال کی اب بھی جانچ کر رہا ہے۔اس سے امریکی میگزین کا وہ دعویٰ بھی غلط ثابت ہو گیا جس میں کہا گیا تھا کہ پاکستان سے ایک بھی ایف 16 طیارہ غائب نہیں ہے۔ تمام جنگی طیارے محفوظ ہیں۔ اس کے علاوہ، پاکستان کا جھوٹ بھی بے نقاب ہو گیا ہے۔ اس معاملے پر امریکہ اب تک خاموش ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ دفاعی سودوں میں دو طرفہ معاہدے کے تحت یہ پالیسی معاملہ ہے۔ لہذا اس مسئلے پر عوامی تبصرہ نہیں کیا جا سکتا۔ہندوستان نے 9 مارچ کو بتایا تھا، ” ہم نے امریکہ سے جانچ کی مانگ کی ہے کہ کیا ایف -16 کو ہندوستان پر حملے کے لئے استعمال کرنا فروخت کی شرائط کے خلاف ہے؟ ” ہندوستان نے کہا تھا کہ اس حملے کے کئی عینی شاہد ہیں۔ ان میں ایک ایف 16 طیارے کو مار گرانے والے ابھینندن بھی ہیں۔ اس کے علاوہ پاکستان میں ایف -16 طیارے میں استعمال کی جانے والی امرام میزائل کی تصاویر بھی میڈیا میں دکھائی جا چکی ہیں۔ ساتھ ہی کچھ الیکٹرانک ثبوت بھی موجود ہیں۔سی این آئی کے مطابق ہندوستانی فضائیہ نے بتایا تھا کہ بالاکوٹ میں دہشت گردانہ کیمپ پر کی گئی کارروائی کے اگلے دن پاکستان نے ایف -16، جے ایف -17 اور میراج 3/5 طیاروں کو ہندوستان پر حملے کے لئے روانہ کیا تھا جنہیں ہمارے ریڈار نے پکڑ لیا تھا۔ وہیں، پاکستان کا کہنا ہے کہ ہندوستان ایف -16 کو مار گرانے کا جھوٹا دعوی کر رہا ہے۔ ساتھ ہی دعوی کیا تھا کہ میڈیا میں دکھائی گئی امرام میزائل تائیوان کی ہے۔ تائیوان نے پاکستان کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بغیر امریکہ کی منظوری کے اسے کسی تیسرے ملک کو امرام میزائل فروخت کرنے کی اجازت نہیں ہے۔یاد رہے کہ وادی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں 14فروری کو ایک فدائین حملے میں سی آر پی ایف کے 49اہلکار ہلاک ہوگئے تھے جس کے بعد ہندوستان اور پاکستان کے مابین شدید کشیدگی بڑھ گئی اور 26اکتوبر کو بھارتیہ فضائیہ نے پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے بالا کوٹ علاقے میں فضائی حملہ کرکے دعویٰ کیا تھا کہ انہوںنے وہاں پر 200سے تین سو کے قریب ملیٹنٹوں کو مارا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی بھارت نے یہ بھی دعویٰ کیا تھا کہ فضائیہ نے پاکستان کے ایک مگ F16کو بھی مار گرایا جس کی پاکستان نے تردید کی اور اس کے بعد امریکہ نے بھی یہ دعویٰ کیا تھا کہ پاکستان کے پاس تمام مگ سلامت ہے ۔

تبصرے
Loading...