پٹن میں بارشوں کے پانی نے سیلابی صورتحال اختیار کی

پانی رہائشی مکانوں میں اچانگ گھس گیا، کھڑی فصلوںکو بھی پہنچایا نقصان

0 14

صورتحال کے لئے مقامی لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے حکام کو ذمہ دار ٹھہرایا
سرینگر/12جون/سی این آئی/ گذشتہ رات کی موسلادھار بارشوں کے نتیجے میں شمالی کشمیر کے پٹن علاقے میں سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔اطلاعات کے مطابق چاندل۔وانیگام روڑ پر بنا ،نالہ فیروزپورہ کا پل پانی کے تیز بہائو میں آکر ڈھ گیا جس سے درجنوں دیہات کٹ کر رہ گئے ہیں۔ادھر پٹن کے ہانجی ویرہ میں ندی نالوں میں طغیانی آنے کے نتیجے میں سیلابی صورتحال پیدا ہوا اور بارشوں کا پانی باندھ کے اوپر بہہ گیا جو لوگوں کے مکانوں میں گھس گیا ۔ جبکہ پٹن کے ہی ایک اور علاقے میں باندھ ٹوٹنے کی وجہ سے پانی نے تمام فصلوں کو تباہ کردیا ہے۔ اس دوران لوگوںنے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ باندھ میں ٹھیکداروں نے ناقص میٹریل کا استعمال کیاتھا جس کی وجہ سے باندھ ٹوٹ گیا ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق وادی کشمیر میں گذشتہ روز تیزہوائیوں اور موسلادھار بارش کی وجہ سے کئی علاقوں میں جہاں سیلابی صورتحال پیدا ہوئی اور لوگوں کے جان ومال کو کافی نقصان پہنچا ہے وہیںپر شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں پٹن قصبہ کے کئی علاقوں کی کوہلوں میں شدید بارشوں کی وجہ سے طغیانی آئی اور کئی علاقوںمیں بارشوں کے پانی مکانوں میں گھس گیا۔ اطلاعات میں مزید بتایا جارہا ہے کہ کہ پٹن کے کھورو ، شیرا باد اور ہانجی ویرا گائوں میں مسلسل بارشوں کے نتیجے میں بہت پانی جمع ہوا ہے جس سے لوگوں کی نقل و حمل محدود ہوکر رہ گئی ہے۔ادھر ہانجی ویرہ پائین، ہانجی ویرہ بالامیں نزدیکی کوہل کے باندھ کے اوپر سے پانی بہہ کر مذکورہ علاقوں کے مکانوں میں اچانک گھس گیا جس کی وجہ سے مکانوں میں موجود مال و اسباب خراب ہوگیا ہے ۔ اس دوران مقامی لوگوں نے اس صورتحال کیلئے انتظامیہ اور متعلقہ محکمہ کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا ہے کہ ایک طرف سرکار نے حکمنامہ جاری کیا تھا کہ دریائوں اور کوہلوں کے نزدیک درختوں کوکاٹا جائے جس کے بعد ان کی مرمت کی جائے گی تاہم درخت کاٹنے کے بعد بھی کوہلوں اور دریائوں کے کناروں کی مرمت نہیں کی گئی جس کے نتیجے میں آج بارشوں کے پانی نے سیلابی صورتحال اختیار کی۔ ادھر بالہ کوہل ، گنڈبل میں باند ٹوٹ جانے سے گنڈبل ہامرے، اندرگام ، گوشہ بگ ، لولی پورہ ، ذراعت کو کافی نقصان پہنچا ۔یہاں بھی لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کے مطابق باندھ کی تعمیر کے دوران ماقص میٹریل کا استعمال کیا گیا جس کی وجہ سے باندھ ٹوٹ گیااور پانی نے ذراعت کو کافی نقصان پہنچایا ۔دونوں جگہوں پر مقامی لوگوںنے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے مال واسباب اور فصلوں کو ہوئے نقصان کا معاوجہ دیا جائے ۔ (سی این آئی)

تبصرے
Loading...