پلہالن پٹن میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران تشدد بھڑک اُٹھا

47

پلیٹ چھروں سے دو نوجوان مضروب ، اسپتال میں بھرتی

سرینگر: تانترے پورہ پلہالن پٹن میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران تشدد بھڑپ اُٹھا ، مشتعل ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے فورسز نے پلیٹ فائرنگ کی جس کے نتیجے میں دو نوجوان پلیٹ لگنے سے مضروب ہوئے اور انہیں علاج ومعالجہ کی خاطر اسپتال منتقل کیا گیا۔ بلاک میڈیکل آفیسر کے مطابق دو نوجوانوں کو زخمی حالت میں اسپتال لایا گیا جن کے جسم میں پلیٹ چھرے پیوست ہیں۔ جے کے این ایس کے مطابق عسکریت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جونہی تانترے محلہ پلہالن پٹن گاؤں کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا اس دوران لوگ گھروں سے باہر آئے اور احتجاجی مظاہرئے کئے۔ نمائندے کے مطابق سیکورٹی فورسز نے تشددپر اُتر آئی بھیڑ کو منتشر کرنے کیلئے اشک آور گیس کے گولوں کے ساتھ ساتھ پلیٹ چھروں کا بھی استعمال کیا جس کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہوئے جن میں سے دو کو علاج ومعالجہ کی خاطر نزدیکی اسپتال منتقل کیا گیا۔ بلاک میڈیکل آفیسر پٹن کے مطابق دو نوجوان جن کو پلیٹ لگے ہیں اسپتال میں اُن کاعلاج ومعالجہ ہورہا ہے۔ مذکورہ آفیسر کے مطابق دونوں کی حالت مستحکم ہے۔ ادھر مقامی ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے بغیر کسی اشتعال کے نوجوانوں پر پلیٹ گن کے چھرے فائر کئے جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں۔ جے کے این ایس نے اس ضمن میں جب دفاعی ترجمان کے ساتھ رابط قائم کیا تو انہوں نے پلیٹ چھرے استعمال کرنے سے لا تعلقی کا اظہا رکرتے ہوئے کہاکہ خشت باری کرنے والوں کو منتشر کرنے کیلئے ہلکا لاٹھی چارج اور اشک آور گیس کے گولے داغے گئے۔ دفاعی ترجمان نے مقامی لوگوں کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ جنگجو مخالف آپریشن کے دوران فورسز اہلکاروں نے پلیٹ گن کا استعمال نہیں کیا۔ (جے کے این ایس)

تبصرے
Loading...