پلوامہ میں دن دہاڑ ے نامعلوم اسلحہ برداروں کے ہاتھوں فو جی اہلکار ہلاک

علاقہ میں خوف ودہشت کی لہر۔معاملہ درج کر کے حملہ آ وروں کی تلاش شروع

سرینگر13مارچ /سی این ایس / پنگلنہ پلوامہ میں اس وقت خوف ودہشت کی لہردوڑ گئی جب یہاں نامعلوم اسلحہ برداروں نے ایک مقامی فو جی اہلکار پردن دہاڑ ے گولیاں مار کر موت کی ابدی نیند سلا دیا۔ پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرکے حملہ آ وروں کی تلاش بڑ ے پیمانے پر شر وع کردی ہے۔سی این ایس کے مطابق پلوامہ کے پنگلینہ گاؤں کے نائیک محلہ میں بدھ کے روز 25 سالہ شوکت احمد نائیک عرف عاشق حسین ولد محمد یوسف نائیک نامی ایک فوجی اہلکار جو جموں وکشمیر لائٹ انفنٹری میں تعینات تھاپر نقاب پوش بندوق برداروں نے اس کے گھر کے باہر گولیوں کی بوچھاڑ کی ۔ گولیوں کی آ واز ہوتے ہی علاقہ میں خوف ودہشت کی لہردوڑ گئی ۔گولیوں چلانے کے بعد اسلحہ بردار فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ اگر چہ خون میں لت پت فوجی اہلکار کوفوری طور نزدیکی ہسپتال منتقل کیا گیاتاہم ڈاکٹروں نے اس کو مردہ قرار دیا ۔ معلوم ہوا ہے کہ شوکت احمد پہلے پولیس میں بطور ایس پی اؤتعینات ہواتھا اور بعد میں جموں وکشمیر لائٹ انفنٹری بحثییت گا رڈ نر تعینات ہوا۔ نمائند ے کے مطابق قانونی لوازمات کے بعد جب اسکی لعش واپس گھر لائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا اور اسکے رشتہ دار سڑ کوں پر نکل کر احتجاج کر نے لگے۔واقعہ کے بعد فوج اور ایس او جی اہلکاروں نے پورے علاقے کو گھیرے میں لیکر تلاشی آپریشن شرو ع کیا۔

تبصرے
Loading...