پاکستان اور بھارت مسئلہ کشمیرکے حل کیلئے مذاکرات کریں/ جرمن وزیر خارجہ

60

بھارت اور پاکستان کے مابین جاری کشیدگی پر جرمنی نے کیا تشویش کا اظہار

سرینگر: بھارت اور پاکستان کے مابین کشیدگی پر تشویش کااظہارکرتے ہوئے جرمنی نے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان کشمیر ہی سب سے بڑا تنازعہ ہے جس کو باہمی اعتماد سازی کے ساتھ حل کرنے کی ضرورت ہے ۔ جرمنی نے دونوں ممالک کو کشیدگی دور کرنے اور مذاکراتی عمل دور کرنے کی صلاح دی ہے ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا مانیٹرنگ کے مطابق جرمنی نے پاک بھارت کشیدگی کے خاتمے کیلئے دونوں ممالک کے درمیان مسئلہ کشمیر پر مذاکرات کی ضرورت پر زور دیا ہے۔پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے جرمن ہم منصب ہائیکو ماس نے اسلام آباد میں ملاقات کی جس کے بعد دونوں نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔ جرمن وزیر خارجہ ہائیکو ماس نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور پاک بھارت کشیدگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انتہائی ابتر صورتحال ہے، مسئلہ کشمیرکے حل اورکشیدگی میں کمی کے لییمذاکرات ہونے چاہئیں۔جرمن وزیرخارجہ نے کہا کہ پاکستان کے ساتھ بہت اچھے تعلقات ہیں اور افغان امن عمل میں پاکستان کے کردارکوسراہتے ہیں۔شاہ محمود نے کہا کہ جرمن وزیرخارجہ سیمفیدبات ہوئی اور انہیں پلوامہ واقعے کے بعد کی صورتحال سے مکمل آگاہ کیا گیا، دہشتگردی کیخاتمے کیلئے نیشنل ایکشن پلان پرعمل درآمد کررہے ہیں اور سیاسی قیادت کی مشاورت سیانتہاپسندی کیخاتمے کیلئے اقدامات کررہے ہیں۔سی این آئی کے مطابق پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی تعلقات کی ضرورت ہے اور جرمن وزیرخارجہ سے بھی ویزہ سہولتوں میں نرمی پر بھی بات ہوئی، پاکستان میں بیرونی سرمایہ کاروں کاخیرمقدم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں امن کے لیے پاکستان کا اہم کردار ہے، افغان امن مذاکرات پرجرمنی مطمئن ہے۔

تبصرے
Loading...