ویڈیو: کرناہ میں پانچ افراد برفانی طوفان کی زد میں آگئے ،تین افراد موقعے پر ہی لقمہ اجل، دو معجزاتی طور پر بچ نکلے

41

سرینگر: سرحدی ضلع کپوارہ کے قصبہ کرناہ میں 5افرادبرفانی طوفان کی زد میں آگئے جن میں سے تین افراد موقعے پر ہی لقمہ اجل بن گئے جبکہ دو معجزاتی طور پر بچ نکلنے میں کامیاب ہوگئے ۔ادھر سابقہ وزرائے اعلیٰ محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ نے حادثے پر سخت غم وافسوس کااظہار کرتے ہوئے متاثرہ کنبوں کے ساتھ ہمدردی کااظہار کیا ہے۔ اس کے علاوہ سجاد غنی لون ، ڈاکٹر فاروق عبداللہ ، گورنر کے مشیر خورشید گنائی اور دیگر لوگوں نے حادثے پر دکھ ظاہر کیا ہے ۔کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق کرناہ میں خونی نالہ سادھنا ٹاپ کے نزدیک گذشتہ روز پانچ افراد اُس وقت برفانی طوفان کی زد میں آگئے جب وہ کرناہ کی طرف جارہے تھے ۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ گذشتہ روز قریب رات ایک بجے کرناہ کی طرف پید سفر کرنے والے خونہ نالہ سادھنا ٹاپ کے نزدیک 5افراد برفانی طوفان کی زد میں آگئے جن میں سے تین افراد طاہر یونس خواجہ عمر 22سال ولد محمد یونس، عبدالخالق شیخ عمر 40برس ولد غلام قادر ساکنان حاجی نارڈ کرناہ اور فرید احمد عمر 25برس ولد لال دین ساکنہ شمس پورہ کرناہ موقعے پر ہی شدت کی سردی کے نتیجے میں لقمہ اجل بن گئے ۔ جبکہ دو افراد کسی طرح سادھنا ٹاپ پہنچنے میں کامیاب ہوگئے ۔ اس ضمن میں ایس ایس پی کپوارہ امبرکر شری رام دنکر نے کہا کہ تینوں فرفانی طوفان کی زد میں آکر برف کے نیچے دب جانے سے لقمہ اجل بن گئے ہیں ۔ ادھر سابقہ وزرائے اعلیٰ محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ نے حادثے پر سخت غم وافسوس کااظہار کرتے ہوئے متاثرہ کنبوں کے ساتھ ہمدردی کااظہار کیا ہے۔ اس کے علاوہ سجاد غنی لون ، ڈاکٹر فاروق عبداللہ ، گورنر کے مشیر خورشید گنائی اور دیگر لوگوں نے حادثے پر دکھ ظاہر کیا ہے ۔

تبصرے
Loading...