ویڈیو: مولو چترا گام میں مختصر شبانہ شو ٹ آوٹ ، مقامی جنگجو اور اْس کا ’’سرگرم ساتھی‘‘جاں بحق، ایک جنگجو فرار / پولیس

مکمل ہڑتال کے بیچ دوآبائی علاقوں میں سپرد خاک ، تجہیز و تکفین میں ہزاروں لوگوں کی شرکت

0 701

Shopian shootout : Missing Driver among two slainShopian : Two bodies which were recoverd from the spot after brief exchange of fire in Molu chitragam area of Shopian have been identified. An official while talking to KNO identified the slain as Firdous Ahmad bhat S/o Mohammad Jamal bhat R/o Ponewa kulgam."Firdous was missing from 1st week of April this year," he told KNO. He identified the second slain as Sajad Ahmad dar S/o Gulam Hasan dar R/o Wampora kulgam, a driver of Tavera. Earlier two dead bodies were recoverd from the site of shootout between militants and government forces in Molu Chitragam on Sunday late night. An official told KNO that militants who were traveling in a vehicle bearing registration No (JK03E0397) jumped a check post set up by party of 44 RR in the area and opened fire. "Forces retaliated, triggering a brief shootout after which two dead bodies were recovered from the site," he said. He told KNO that Firdous was missing since April 05 and had later joined militant ranks while as sajad was working as OGW. "Further investigation about him is going on," he said(KNO)

Posted by Tameel Irshad on Sunday, 2 June 2019

سرینگر: پہاڑی ضلع شوپیان کے مولو چترا گام علاقے میں فورسز اور جنگجوئوں کے مابین مختصر شبانہ شوٹ آوٹ ہوا جس دوران پولیس نیمقامی جنگجو اور اْس کا ایک ’’سرگرم ساتھی‘‘ کو جاں بحق کرنے کا دعویٰ کیا ہے ۔ جبکہ ایک جنگجو فورسز کو چکمہ دیکر جائے واردات سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔ ادھر مہلوک جنگجو اور اس کے ساتھی کو ہزاروں لوگوں کی موجودگی کی آبائی علاقوں میں سپرد خاک کیا گیا جبکہ ان کے نماز جنازوں میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی ۔ سی این آئی کے مطابق مولو چترا گام شوپیان علاقے میں اتوار اور سوموار کی درمیانی رات کو قریب ایک بجے اس وقت گولیوں کی گن گرج سنائی دی جب فورسز اور جنگجوئوں کے مابین مختصر شوٹ آوٹ ہوا جس دوران فورسز نے جھڑپ کے مقام سے دو نعشیں بر آمد کی ۔ پولیس نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی ضلع شوپیان کے مولو چھترا گام گائوں میں جو گولیوں کا مختصر تبادلہ ہوا اْس میں ایک جنگجو اور اْس کا ایک ’’سرگرم ساتھی‘‘ جاں بحق ہوگیا۔پولیس بیان کے مطابق جنگجوئوں کی نقل و حمل کی مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد فوج و فورسز اور پولیس نے اتوار اور سوموار کی درمیانی رات کوترکہ وانگام روڑ پر مولو چترا گام کے نزدیک ناکہ لگایا تھا جس دوران وہاں سے ایک تویرا گاڑی جس میں جنگجو سوار تھے گزر گئے ۔ پولیس کے مطابق جونہی گاڑی کو ناکہ پر رکنے کا اشارہ کیا گیا تو گاڑی میں موجود جنگجوئوں نے ناکہ توڑ کر فرار ہونے کی کوشش اور فورسز پر اندھا دھند گولیاں چلائی جس کے ساتھ ہی ناکہ پر موجود فورسز اہلکاروں نے جوابی کارورائی کی اور طرفین کے مابین فردوس احمد بٹ نامی جنگجو اور اْس کا ’’سرگرم ساتھی‘‘ سجاد احمد ساکنان کولگام جاں بحق ہو گئے ، جبکہ تیسرے جنگجو نے اندھیرے کا فایدہ اٹھاکر راہ فرار اختیار کی۔پولیس بیان کے مطابق جنگجوکے قبضے سے اسلحہ و گولہ بارود بھی ضبط کیا گیا جبکہ تویرا گاڑی بھی اپنی تحویل میں لی گئی ۔ پولیس کا کہنا تھا کہ دونوں جنگجوئوں کی نعشیں ضروری لوازمات کی ادائیگی کے بعد آخری رسومات کیلئے لواحقین کے حوالے کر دی گئی ۔ ادھر جونہی کولگام میں مقامی جنگجو اور نوجوان کی ہلاکت کی خبر پھیل گئی تو وہاں کہرام مچ گیا جب لوگوں کی بڑی تعداد نے سڑکوں پر نکل کر احتجاجی مظاہرے کئے ۔ اسی دوران جونہی دونوںکی نعشیں آبائی علاقوں میں پہنچائی تو ووہاں صف ماتم بچھ گیا جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد نے جنگجو اور نوجوان کے آبائی علاقے کا رخ کیا اور وہاں دونوں کے نماز جنازوں میں شرکت کی ۔ جس کے بعد دونوں کو پُر نکم آنکھوں کے ساتھ آبائی علاقے میں سپرد خا ک کیا گیا ۔ ( سی این آئی )

تبصرے
Loading...