ویڈیو: محبوبہ مفتی کی قیادت میں پی ڈی پی کا پلوامہ میں احتجاجی مظاہرہ

یاسین ملک کی فوری رہائی،جماعت اسلامی پر پابندی کے خاتمے اور ہائی وے پر پابندیاں ختم کرنے کا مطالبہ

0 134

سرینگر: ایل او سی دو طرفہ تجارت کی معطلی کے خلاف اور لبریشن فرنٹ کے محبوس اور علیل چیئرمین محمد یاسین ملک کی رہائی کے حق میں پی ڈی پی نے پلوامہ میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔ سی این ایس کے مطابق پی ڈی پی کے بیسوں ورکر پارٹی صدر محبوبہ مفتی کی سربراہی میں پلوامہ میں جمع ہوئے اور انہوں نے آر پار تجارت کی معطلی، یاسین ملک کی گرفتاری اور جماعت اسلامی پر پابند ی کیخلاف احتجاج درج کیا۔جلوس میں شامل شرکاء نے ان تینوں معاملات کے خلاف جم کر نعری بازی کی جس دوران ٹاؤن ہال پلوامہ سے ڈی سی آفس تک مارچ کیا گیا۔ اس دوران محبوبہ مفتی نے کنٹرول لائن پر منقسم کشمیر کی تجارتی سرگرمیوں کو معطل کئے جانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے سے قریب سینکڑوں تاجر،مزدور اور دیگر افراد بھی یہ تجارت بند ہونے سے بے روزگار ہوئے ہیں۔محبوبہ مفتی نے کہا کہ جس طرح پکڑ دھکڑ کا ماحول جاری ہے، جماعت اسلامی اور لبریشن فرنٹ پر پابندی لگائی گئی اور لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک جیل میں بہت علیل ہیں، مظفر آباد روڑ پر ہمارا تجارت چل رہا تھا اس کو بند کیا گیا ہے، راتوں کے دوران چھاپے ڈالے جاتے ہیں اور نوجوانوں کو پکڑا جارہا ہے، تصادم آائیوں کے بعد جنگجوؤں کی لاشوں کو مسخ کیا جارہا ہے، یہ احتجاجی مارچ اسی کے خلاف ہے۔ ایک اؤ سی تجارتی سرگرمیوں پر پابند یاں عائد کرنے کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ وہ آرپارتجارت کیلئے ایک موثراورفعال میکانزم بنانے کے حق میں ہیں لیکن تجارتی سرگرمیوں کومعطل کئے جانے سے پہلے متعلقہ تاجران کویہ موقعہ فراہم کیاجاناچاہئے تھاکہ وہ نقصان سے بچ سکیں۔انہوں نے بتایاکہ تاجروں نے اس تجارت کیلئے کروڑوں کاسامان یامال خریدا ہواہے جو گوداموں میں پڑا ہواہے جبکہ گزشتہ لگ بھگ آٹھ ہفتوں سے اوڑی کے راستے تجارت معطل رہنے کے نتیجے میں درجنوں گاڑیوں میں بھراسامان بالخصوص میوہ جات سڑرہے ہیں۔محبوبہ نے مطالبہ کیا کہ کراس ایل او سی تجارت کی معطلی کا حکم واپس لیا جانا چاہئے۔محبوبہ نے لبریشن فرنٹ چیئر مین محمد یاسین ملک کی فوری رہائی اورجماعت اسلامی پر پابندی کے خاتمے اور ہائی وے پر پابندیاں ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

تبصرے
Loading...