ویڈیو:ہڑتال اور سخت سیکورٹی کے بیچ اننت ناگ ضلع میں پہلے مرحلے کے تحت ووٹنگ اختتام پذیر

کہیں جم کر ووٹنگ تو کہیں مکمل بائیکاٹ ،،کئی پولنگ مراکزمیں بھاری رش تو کئی سنسان

0 114

سرینگر: پارلیمانی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے تحت پارلیمانی نشست اننت ناگ میں تین مرحلوں کے تحت ہونی والی ووٹنگ میں منگل کو غیرمعمولی حفاظتی انتظامات اور مزاحمتی قیادت کی جانب سے دی گئی الیکشن بائیکاٹ کال نیزہڑتال کے بیچ اننت ناگ ضلع میں ووٹ ڈالیں گئے۔منگل کوصبح7بجے سے سہ پہر4بجے تک جاری رہنے والی پولنگ کے دوران اننت ناگ کے کئی علاقوں کو چھوڑ کر دیگر علاقوں میں لوگوں نے پارلیمانی انتخابات میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیا۔غیرسرکاری ذرائع کے مطابق مجموعی طور ضلع اننت ناگ میں 13فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی ۔ اسی دوران معلوم ہوا ہے کہ ووٹنگ کے بیچ کئی علاقوں میں فورسز اور مظاہرین کے درمیان پُر تشدد جھڑپیں ہوئی جس دوران فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ٹیر گیس شلنگ اور پیلٹ فائرنگ کی ۔ جس کے نتیجے میں کئی نوجوان زخمی ہو گئے ۔سی این آئی کے مطابق ملک کے دیگر علاقوں کے ساتھ ساتھ جموں کشمیر میں جاری پارلیمانی انتخابات کے آخری مرحلے کے تحت پارلیمانی نشست اننت ناگ میں سیکورٹی وجوہات کی بنا پر الیکشن کمیشن نے تین مرحلوں کے تحت ووٹنگ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اننت ناگ نشست کیلئے پہلے مرحلے کے تحت منگل کو ضلع اننت ناگ میں کڑے حفاظتی انتظامات اورمزاحمتی لیڈرشپ کی بائیکاٹ وہڑتال کال کے بیچ اننت ناگ ، بجبہاڑہ ، شانگس ، کوکر ناگ ، پہلگام اور ڈورو حلقوں کیلئے ووٹ ڈالیں گئے ۔معلوم ہواکہ ریاستی الیکٹورل حکام نے سیول اورپولیس محکمہ کے اشتراک سے ووٹنگ کیلئے درکارسامان سبھی پولنگ مراکزمیں دستیاب رکھنے کیلئے یہ ساراسامان متعلقہ پولیس تھانوں میں رکھوادیاتھا،اورمقررہ وقت پرصبح7بجے سے ووٹ ڈالنے کاعمل شروع کیاگیا ۔کسی بھی صورتحال کامقابلہ کرنے کیلئے الیکشن والے سبھی علاقوں میں پولیس وفورسزکے اضافی دستے علی الصبح سے ہی متحرک رکھے گئے تھے جبکہ پولنگ مراکزکے اردگردبھی سیکورٹی حصاربنایاگیاتھا۔ضلع اننت ناگ کے بیشتر علاقوں میں میں صبح سے ہی ووٹ ڈالنے کاعمل سست روی کاشکاررہاکیونکہ گنے چنے ووٹرہی ووٹ ڈالنے کیلئے گھروں سے نکلے۔تاہم شانگس ، پہلگام اور کوکرناگ میں وقت گزرنے کیساتھ ساتھ اچھی تعدادمیں مردوزن ووٹ ڈالنے کیلئے نکلے ۔منگل کی شام چار بجے تک تک غیرسرکاری طورپرضلع اننت ناگ میں میں پولنگ کی مجموعی شرح 13فیصد رہی۔ اس نشست پر کل ملا کر 18امیدوار قسمت آ زما ئی کر رہے ہیں جن میںپی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی ، کانگریس کے ریاستی صدر غلا م احمد میر ، نیشنل کانفرنس کے جسٹس (ر) حسنین مسعودی کے علاوہ دیگر کئی آزاد امید وار امیدان میں ہے اسی دوران معلوم ہوا ہے کہ شام چا ر بجے تک اننت ناگ میں 3.4فیصدر ، ڈورو میں 17.28، کوکرناگ میں 19.36، شانگس میں 15.9،بجہاڑہ میں 2,4اور پہلگام میں 20.37فیصد ووٹ پڑے ۔ اسی دوران معلوم ہوا ہے کہ کئی علاقوں میں میں ووٹنگ کی شرح نہ ہونے کے برابر رہی اور دن بھر پولنگ بوتھوں پر آلو بولتے رہیں ۔کئی پولنگ اسٹیشنوں پر صرف پولنگ عملہ ہی نظر آیا ۔

تبصرے
Loading...