ویڈیو:سوپور، بارہمولہ اور حاجن میں فورسز اور جنگجوؤں کے مابین تصا دم آ رائیاں جاری۔دو جنگجو جابحق

24

مظا ہرین اور فورسز کے ما بین پرتشدد جھڑ پیں۔ایک درجن زخمی۔ کئی ایک زخمی۔ انٹر نیٹ سروس معطل۔ راجوری میں فوجی ا ہلکار ہلاک

 

سرینگر/21مارچ/ سی این ایس / شمالی کشمیر کے سوپور، کنڈ ی اور حاجن میں فورسز اور جنگجوؤں کے مابین تصا دم آ رائیاں جاری ہیں۔ سوپور جھڑ پ کے دوران ایک پولیس آفیسر اور اس کا پی ایس او، زخمی ہوگیا۔ حاجن میں جھڑ پ میں ایک بزر گ اور چھ سالہ بچہ شام تک اس رہا شی مکان میں محصور تھے جس میں جنگجو چھپے تھے اس تصادم میں دو جنگجو مارے گئے۔ کنڈ ی بارہمولہ اور سوپور میں جھڑ پ جنگجوؤں اور مظا ہرین کے مابین تصادم جاری تھا۔تینوں مقامات پر پولیس اور مظا ہرین کے درمیان پرتشدد جھڑ پوں کے دوران ایک درجن افراد زخمی ہوئے ہیں جن میں سے ایک نوجوان کو گولی لگی ہے۔ جھڑ پوں کی جگہوں پر مکمل ہڑتا ل رہی جبکہ انکونٹر والے علاقوں میں انٹر نیٹ سروس منقطع رکھی گئی۔ ادھر راجوری میں ہند وپاک افواج کے مابین گولی باری میں ایک فوجی اہلکار ہلاک ہوگیا۔سی این ایس کے مطابق وار پورہ سوپور میں سی این ایس کے مطابق وار پورہ سوپور میں جنگجوؤں کی موجودگی کی اطلاع پانے کے بعد فوج سی آر پی ایف اور جموں کشمیر پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ کے اہلکاروں نے ایک مشترکہ کارروائی کے دوران محاصرے میں لیا ۔یہاں چھپے بیٹھے جنگجوؤں نے خود کار ہتھیاروں سے فورسز پر فائرنگ کی جس کے جواب میں فورسز نے بھی مورچہ سنبھالتے ہوئے جوابی کارروائی کی اور اس طرح طرفین کے مابین جھڑپ شروع ہوئی۔علاقہ میں غیرمتوقع طور ہو ئی فائرنگ سے پو رے علاقہ میں خوف وہراس پھیل گیا جس کے ساتھ ہی فورسز کی مزید کمک کے ساتھ ساتھ درجنوں بکتر بند گاڑیاں، سائرن بجاتی ہوئی جپسیاں اور موبائیل بنکرکے علاوہ کئی بم ڈسپوزل اسکارڈ طلب کئے گئے اور پورے علاقے کے ارد گرد ریزر وائر بچھائی گئی اور تمام راستے سیل کردیئے گئے۔سرکاری ذرائع کے مطابق اس دوران پولیس کی ایک پارٹی پر دستی بم حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں سٹیشن ہاؤس آفیسر ڈھنگی وچھہ مدثر گیلانی اور اس کا ذاتی حفاظتی اہلکار(ایس پی او) جاوید احمد ایک دھماکے کی وجہ سے زخمی ہوگئے جنہیں علاج و معالجہ کیلئے سرینگر منتقل کیا گیا ہے۔یہ دھماکہ معرکہ آرائی کی جگہ پر ہی ہوا اور دونوں اس کی زد میں آگئے ہیں۔گرینیڈ حملے کے فوراً بعدسوپور قصبہ میں فورسز اور مظاہرین کے مابین جھڑپیں شروع ہوئیں۔ اطلاعات کے مطابق فورسز نے سنگباری کررہے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کے گولے داغے۔یہ جھڑپیں فورسز کے تلاشی آپریشن کے دوران شروع ہوئیں جو فورسز کیمپ پر گرینیڈ دھماکہ ہونے کے بعد شروع کیا گیا تھا۔ جھڑ پوں کے دوران مظفر احمد نامی ایک نوجوان گولی لگنے سے زخمی ہو گیا جس کو اسپتال منتقل کیا گیا۔ادھر بارہمولہ کے کنڈی کلنترہ علاقے میں جنگجوؤں کی موجودگی کی اطلاع پانے کے بعد راشٹریہ رائفلز، سی آر پی ایف اور جموں کشمیر پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ کے اہلکاروں نے ایک مشترکہ کارروائی کے دوران بد ھ کی شام محاصرے میں لے لیاہے ۔ مذکورہ بستی میں میں چھپے بیٹھے جنگجوؤں نے خود کار ہتھیاروں سے فورسز پر فائرنگ کی جس کے جواب میں فورسز نے بھی مورچہ سنبھالتے ہوئے جوابی کارروائی کی اور اس طرح طرفین کے مابین جھڑپ شروع ہوئیشروع ہوگئی۔ جمعرات کی صبح رات بھر کی معطلی کے بعد سر نو شروع کیا گیا۔ علاقہ میں دن بھر گو لیوں کا تبادلہ ہوتا رہا۔یس ایس پی بارہمولہ عبد القیوم نے بتایا کہ معرکہ آرائی اْس وقت شروع ہوگئی جب فورسز کا تلاشی آپریشن جاری تھا۔ یہاں بھی جھڑ پ کے مقام پر پولیس اور مظا ہرین کے درمیان تصام م ہوا جن میں کئی نوجوان زخمی ہوئے ہیں۔ادھربانڈی پورہ کے قصبہ حاجن کے میر محلہ میں فوج کی13 آ ر آ رایس اؤجی اور سی آ رپی ایف نے گھیر ے میں لے لیا ہے۔ تلاشی کاروائیوں کے ساتھ ہی علاقہ کے لوگوں نے جمع ہوکر فورسز پر سنگباری کی۔معلوم ہوا ہے کہ حاجن کے میر محلہ میں سرکاری فورسز کو جنگجووں کے ایک گروہ کی موجودگی کے بارے میں خبر ملی ہوئی تھی جسکی بنیاد پر یہاں کا محاصرہ کیا گیا تھا محاصر ے کے ساتھ ہی گو لیوں کی آ واز سنی گئی۔حالانکہ فورسز نے عام لوگوں کے بیچ میں آنے کے خدشات کے پیشِ نظر جھڑپ شروع ہوتے ہی علاقے میں کرفیو جیسی پابندیاں لگادی تھیں اور انٹرنیٹ کی سروس بند کرادی تھی تاہم اسکے باوجود بھی آس پڑوس کے گاوں کے ہزاروں لوگوں نے جمع ہوکر احتجاجی مظاہرے شروع کرنے کے ساتھ ساتھ سرکاری فورسز پر سنگباری کرکے انکا دھیان ہٹانے کی کوشش کی۔علاقے میں موجود ذرائع نے بتایا کہ فورسز نے عام لوگوں پر قابو پانے کیلئے آنسو گیس،پیلٹ گن بھی چلائے تاہم مظاہرین پیچھے نہ ہٹے یہاں تک کہ کافی دیر تک فورسز اور مظا ہرین کے مابین جھڑ پیں ہوتی رہیں۔ ڈیڑ ھ بجے کے بعد یہاں جنگجوؤں اور فوج کا آ منا سامنا ہونے کے بعد طرفین کے مابین فا ئر نگ کا تبا دلہ ہوا جو وقفے وقفے سے جار ی تھا۔پولیس کے مطابق جس رہائشی مکان سے جنگجو گولیاں چلارہے ہیں اْس کے اندر عام شہری بھی موجود تھے جنہیں نکا لا گیا تاہم معلوم ہواہے کہ مکان کے اندر ایک بزر گ اور ایک بچہ محصور ہے۔ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں وقفے وقفے سے گولیاں چلنے کی آوازیں آرہی تھیں اور تصادم میں ایک جنگجو مارا گیا بعد میں ایک اور جنگجو کی لاش ملی ہے۔راجوری ضلع میں جمعرات کو کنٹرول لائن پر بھارت اور پاکستان کی افواج کے مابین گولیوں کا تبادلہ ہوا جس کے نتیجے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک ہوگیا۔کراس ایل او سی فائرنگ کا یہ واقعہ سندربنی سیکٹر میں آج صبح پیش آیا۔اطلاعات کے مطابق اس واقعہ میں ایک فوجی اہلکار ہلاک ہوگیا۔سرکاری ذرائع کے مطابق یہ کراس ایل او سی فائرنگ پاکستان کی طرف سے جنگ بندی کی خلاف ورزی کے بعد شروع ہوگئی۔

 

تبصرے
Loading...