ویڈیو:سرینگر کی تواریخی جامعہ مسجد میں نماز کے بعد نوہٹہ میں فورسز اور مظاہرین کے مابین جھڑپیں

ٹیر گیس شلنگ اور اندھادھند پلٹ گولیاں چلنے کے نتیجے میں 6سے زائد افراد زخمی ہوکر داخل ہسپتال

0 140

سرینگر : سرینگر کی تواریخی جامع مسجد شریف میں بعد از نماز جمعہ فورسز اور مظاہرین کے مابین ہوئی شدید جھڑپوں میں کم سے کم 6افراد خمی ہوئے ہیں ۔ جبکہ نوہٹہ، گوجوارہ اور دیگر ملحقہ علاقوں میں افراتفری اور کشیدگی کا ماحول پھیل گیا ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیاکے مطابق شہر خاص کے نوہٹہ علاقے میں واقع تواریخی جامع مسجد سرینگر میں آج نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہرین اور فورسز کے مابین شدید جھڑپیں ہوئی جس کی وجہ سے علاقے میں سخت کشیدگی اور تنائو کا ماحول پھیل گیا ۔ فورسز و مظاہرین کے مابین ہوئی جھڑپوں کے نتیجے میں کم سے کم 6افراد ٹیر گیس شلوں اور پلٹ سے زخمی ہوگئے ہیں جن کو فوری طور پر نزدیکی ہسپتال علاج و معالجہ کیلئے پہنچایا گیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق سرینگر کے نوہٹہ علاقے میں جمعہ کو اْس وقت چھ افراد زخمی ہوگئے جب یہاں فورسز اور مظاہرین کے مابین جھڑپیں ہوئیں۔اطلاعات کے مطابق نماز جمعہ کے فوراً بعد مظاہرین نے نوہٹہ میں قائم تاریخی جامع مسجد کے باہر فورسز کو سنگباری کا نشانہ بنایا۔پولیس اور فورسز نے جوابی کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ٹیر گیس کے گولے داغے اور پیلٹ فائرنگ کی۔جس کے نتیجے کئی افراد کو چوٹیں آئی ہے ۔ مظاہرین و فورسز کے مابین ہوئی جھڑپوں کی وجہ سے نوہٹہ، گوجوارہ، راجوری کدل ، بہوری کدل اور دیگر ملحقہ علاقوں میں کشیدگی اور تنائو کا ماحول قائم رہا اور دکانداروںنے اپنی دکانیں فوری طور پر بند کردی جگہ کئی ریڈہ بانوں نے اپنے ریڈ ے وہیں چھوڑ کر جان بچانے میں ہی عافیت سمجھی۔ سی این آئی کے مطابق احتجاجی مظاہرین میں شامل افراد اسلام وآزادی کے حق میں نعرے بلند کررہے تھے جبکہ احتجاجی مظاہرین این آئی اے کی کارروائیوں کی بھی مذمت کرتے تھے جبکہ مظاہرین نے تمام قیدیوں کو فوری طور پررہا کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے ۔( سی این آئی )

تبصرے
Loading...