وادی کشمیر میں خود کشی کا رجحا ن دن بہ دن زور پکڑتا جا رہا ہے ،عوامی حلقوں میں تشویش

پانپور میں دوشیزہ نے دریائے جہلم میں چھلانگ لگا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا ، نعش برآمد

0 24

سرینگر: وادی کشمیر میں میں نوجوان لڑکوں اور لڑکیوں کی طرف سے خود کشی کے رحجان میں بے تحاشہ اضافہ ہوتا جا رہا ہے اور وادی کشمیر میں خود کشی کا مسئلہ دن بہ دن سنگین ہوتا جارہا ہے جس کے نتیجے میں عوام میں تشویش کی لہر دوڑ رہی ہے ۔ادھر جمعہ کے روز ایک مرتبہ پھر پانپور میں ایک دوشیزہ نے دریائے جہلم میں چھلانگ لگا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا اوربڑی محنت و مشقت کے بعد دریائے جہلم سے اس کی نعش بر آمد کی گئی ۔کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق وادی کشمیر میں خود کشی کے بڑھتے رجحان کے بیچ جنوبی قصبہ پانپور میں جمعہ کے بعد دو پہر اس وقت سنسنی پھیل گئی جب فرستہ بل علاقے میں ایک دوشیزہ نے دریائے جہلم میں چھلانگ لگا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ دوشیزہ کی طرف سے دریائے جہلم میں چھلانگ لگانے کے بعد مقامی لوگوں نے پولیس و سیول انتظامیہ کے ہمراہ دریائے جہلم سے دوشیزہ کی نعش بر آمد کرنے کیلئے کارروائی شروع کی اور کافی محنت و مشقت کے بعد دو شیزہ کی نعش دریا سے برا ٓمد کر لی ۔پولیس ذرائع کے مطابق دوشیزہ کی نعش بر آمد کی گئی ہے تاہم ابھی تک خود کشی کی وجوہات معلوم نہیں ہوئے ہیں ۔جبکہ اس سلسلے میں ایک کیس درج کر لیا گیا ہے اور مزید تحقیقات شروع کی گئی ہے ۔دریں اثنا وادی کشمیر میں 1990ء سے خود کشی کے واقعات میں کافی تیزی آئی ہے اور نوجوان لڑکے اور لڑکیوں میں خود کشی کے رجحان تیزی سے بڑتے جا رہے ہیں جس کے خلاف عوامی حلقوں میں زبردست تشویش کی لہر دوڑ رہی ہے ۔

تبصرے
Loading...