نیوزی لینڈ میں اسلحہ لائسنس کا نیا قانون نافذ

0 60

ویلنگٹن: نیوزی لینڈ میں کرائسٹ چرچ کی دو مساجد پر دہشت گردانہ حملے میں 50 افراد کے قتل کے ایک ماہ سے کم عرصے میں ہی جمعہ کو اسلحہ لائسنس کا نیا قانون نافذ کردیا گیا۔
گورنر جنرل ڈیم پٹسی ریڈی نے جمعرات کی شب اس قانون پر دستخط کیا، جس کے بعد اس کو قانون کی حیثیت حاصل ہوگئی۔ نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ نے بدھ کے روز اس بل کو منظور کیا تھا۔ نئے اسلحہ لائسنس قانون کے مطابق شہریوں کے لئے فوجی ساخت کے نیم خود کار اسلحہ اور رائفل یا ان کے پرزے رکھنا غیر قانونی ہوگا۔ آرمس (ممنوعہ آتشیں اسلحہ، میگزین اور پرزے ) ترمیمی بل کو پارلیمنٹ میں کامل اکثریت سے پاس کیا گیا، جس کے حق 119 ووٹ پڑے جبکہ مخالفت میں صرف ایک ووٹ آیا۔ نئے قانون کے مطابق غیر قانونی اسلحہ رکھنے پر ملزم کو پانچ سال کی قید کی سزا ہوسکتی ہے ۔ نیوزی لینڈ کی حکومت نے 15 مارچ کو کرائسٹ چرچ کی مساجد پر دہشت گردانہ حملے کے فورا بعد فوجی طرز کے اسلحہ پر پابندی عائد کرنے کا عزم ظاہر کیا تھا، کیونکہ دہشت گرد حملہ آور نے نیم خود کار اسلحہ کا استعمال کیا تھا۔

تبصرے
Loading...