معمول کی زندگی بری طرح سے متاثر ، سردی کی لہر میں اضافہ ، جمعہ سے موسم میں بہتری کا امکان/ محکمہ موسمیات

62

ماہ مارچ میں بھی موسم کے تیور سخت ، وادی میں ہلکی برفباری اور موسلا دھار بارشیں

سرینگر : ماہ جنوری او ر فروری کے بعد مارچ کے مہینے میں بھی موسم کے سخت تیور کے بیچ ٹنل کے آر پا ر موسم نے اس وقت کروٹ بدلی جب موسمیات کی پیشگوئی کے عین مطابق سرینگر سمیت وادی کے میدانی اور بالائی علاقوں میں ہلکی برفباری اور موسلا دھار بارشیں ہوئی ۔ بدھ کی شام تک وادی کشمیر کے میدانی علاقوں میں بارشیں وقفے وقفے سے جاری رہنے کے نتیجے میں جہاں لوگوں میں کافی مایوسی پائی جا رہی ہے وہی معمول کی زندگی بھی متاثر رہی۔ تازہ برفباری اور بارشوں کے باعث سردی کی لہر نے پھر دستک دی ہے جس کے نتیجے میں لوگ گرم ملبوسات زیب تن کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔ اسی دوران تازہ برفباری اور بارشوں کے بعد تاریخی مغل شاہراہ سمیت نصف درجن شاہرایوں پر ٹریفک کی نقل و حمل بند کی گئی تاہم سرینگر جموں شاہراہ پر گاڑیوں کی آمد رفت کچھ گھنٹوں تک بند رہنے کے بعد دوبارہ بحال ہوئی۔ ادھر محکمہ موسمیات نے آنے والے مزید دو دنوں تک بارشیں اور برفباری کی پیشگوئی کرتے ہوئے لوگوں سے احتیاط برتنے کی اپیل کی ہے۔ سی این آئی کے مطابق وادی کشمیر میں امسال خراب موسمی صورتحال کا سلسلہ رہتے ہوئے مارچ کے مہینے میں بھی موسم نے سخت تیور دکھاتے ہوئے اہل وادی کو مشکلات میں مبتلا کیا ۔ کچھ دنوں کے خوشگوار موسم کے بعد محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے عین مطابق منگل کے بعد دو پہر سے وادی کشمیر کے میدانی علاقوں میں بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو بدھ کو دوسرے روز بھی جاری رہا ۔ منگل کی رات دیر گئے محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے عین مطابق وادی کے شمال و جنوب میدانی علاقوں میں بارشوں کا سلسلہ ہوا جبکہ بالائی علاقوں خاص طور پر مشہور سیاحتی مرکز گلمرگ اور دیگر کئی مقامات پر تازہ برفباری ہونے کے علاوہ بدھ کے روز شہر سرینگر اور وادی کے دیگر علاقوں میں ہلکی برفباری ہوئی ۔ بدھ کو دن بھر دن بھر وقفے وقفے سے بارشیں جاری رہنے کے نتیجے میں میں شہر سرینگر میں عام اور کاروباری زندگی پر اثر پڑا اورشہر کی سڑکوں پر پانی جمع ہونے سے عام لوگوں کو عبور و مرور کے حوالے سے سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔وادی کے شمال و جنوب میں واقع دیگر اضلاع میں بھی تازہ بارشیں ہوئی ہے جبکہ شوپیان ،کپواڑہ اور دیگر کئی اضلاع کے میدانی علاقوں میں بھی ہلکی برفباری ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ۔کپوارہ،بارہمولہ ،بڈگام ،گاندربل ،پلوامہ ،اننت ناگ ،شوپیان اور کولگام سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ان تمام اضلاع کے میدانی علاقوں میںہلکی بارشیں ریکارڈ کی گئی ۔اس دوران سونہ مرگ،لداخ کے بیشتر علاقوں ، پہلگام ، مڑھل ، ٹیٹوال ، گریز ،زوجیلااور اوڑی کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری کی اطلاعات ملی ہیں۔ پہلگام ،آڑو، چندن واڑی ،سونہ مرگ ،زوجیلا ، گگن گیر ،گنڈ ،یوسمرگ ،افروٹ ،سادھنا ٹاپ ،فرکیاں گلی ،میلیال ،مڑھل اور اس کے مضافاتی علاقوں میں اوسطاً ایک تین فٹ برفباری ریکارڈ کی گئی۔گلمرگ سے نمائندے نے اطلاع دی ہے کہ گلمرگ کی اونچی پہاڑیوں اور میدانوں میں تازہ برفباری سے سیاحوں میں مسرت کی لہر دوڑ گئی۔محکمہ موسمیات کے مطابق گلمرگ میں گزشتہ شب کے دوران قریب ایک فٹ تازہ برف گری ہے جبکہ آس پاس کے اونچائی والے علاقوں میں اس سے بھی زیادہ برفباری ہوئی ہے۔شوپیان سے نمائندے نے اطلاع دی ہے کہ ضلع کے بالائی علاقوں میں جم کر برفباری ہوئی۔اہر بل ،سیدھو ، ہیر پورہ اور پیر کی گلی میںبھاری برفباری کی اطلاع ہے۔سرحدی علاقوں میں تازہ برفباری سے متعدد سڑکیں گاڑیوں کی آمدورفت کیلئے بند کردی گئی ہیں۔ اْدھر جواہر ٹنل کے اْس پار پیر پنچال پہاڑی سلسلے کے ساتھ ساتھ بدھل راجوری ، گلبرگ، مہور، بھدرواہ،ڈوڈہ، کشتواڑ، چھاترو، مڑوا، دچھن اور بنی کے علاوہ ویشنو دیوی مندر کی مضافاتی پہاڑیوں پر تازہ برفباری کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ مجموعی طور پر پوری وادی کے میدانی علاقوں میں بارشوں اور بالائی علاقوں میں برفباری کا تازہ سلسلے کے بیچ جہاں ایک طرف معمول کی زندگی بری طرح سے متاثر ہوئی، وہیں دوسری جانب رات کے کم سے کم درجہ حرارت میں بھاری اضافہ دیکھنے کو ملا۔ دریں اثناء محکمہ موسمیات نے بتایا کہ وادی میںمزید دو دنوں تک مطلع ابر آلود رہنے کا امکان ہے اور اس دوران بارشیں اور برفباری بھی ہوسکتی ہے ۔

تبصرے
Loading...