ماہ رمضان میں موسم کی ابتر صورتحال :کاروبار پر منفی اثرات

عید کے حوالے سے خریدوفروخت میں موسم کی دگرگوں صورتحال سے کافی کمی

0 64

سرینگر/ جوں جوں ماہ رمضان کے دن گزرجاتے ہیں عید کی خریداری میں اضافہ ہوتا ہے تاہم وادی میں موسم کی ابتر صورتحال کی وجہ سے عید خریداری میں کوئی جوش لوگوں میں دکھائی نہیں دے رہا ہے جس کے نتیجے میں دکانداروں ، کاروباریوں اور چھاپڑی فروش شدید زہنی کوفت کے شکار ہوگئے ہیں ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق دوسرے مسلم خطوں کی طرح وادی کشمیر میں بھی ماہ رمضان میں ہر طرف خوشیاں اور مسرت کاماحول پھیل جاتا ہے اس کے ساتھ ساتھ جوں جوں ماہ رمضان کے دن گزرجاتے ہیں بازاروں میں عید کے حوالے سے خریدوفروخت میں اضافہ ہوتا جارہا ہے تاہم رواں برس موسم کی دگرگوں صورتحال کی وجہ سے عید خریداری میں کافی کمی واقع ہوئی ہے جس کی وجہ سے دکانداروں ، کاروباریوں اور چھاپڑی فروش کافی پریشان ہے ۔ اس حوالے سے انہوںنے بتایا کہ انہوںنے ماہ رمضان کے پیش نظر کافی مال خریدا ہے اور ماہ رمضان کے دوران مال فروخت کرنے کی امید تھی تاہم موسم لگاتار ابتر رہنے کی وجہ سے خریداری کافی کم ہے جو باعث تشویش ہے ۔ انہوںنے کہاکہ اگر موسم بہتر نہیں ہوگا تو کاروبار میں پچاس فیصدی کمی ہوسکتی ہے جس کی وجہ سے کاروباریوں کو کروڑوں روپے کا نقصان ہوسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان کے دن جوں جوں گزرجاتے ہیں لوگ مختلف چیزوں کی خریداری کرتے ہیں جن میں ملبوسات، جوتے چپل،کھانے پینے کی اشیاء اور گھریلوں سجاوت کی اشائ، مناری ، ہوزری ،کراکری و دیگر چیزوں کی لوگ جم کرخریداری کرتے ہیں لیکن اگر موسم کی صورتحال خراب رہتی ہے تو لوگ خریداری میںخاص دلچسپی نہیں لے رہے ہیں ۔ سی این آئی کے ساتھ بات کرتے ہوئے کئی تاجروںنے کہا کہ ماہ رمضان میں جس اندازے سے خریداری ہوتی تھی اس برس وہ انداز فی الحال دکھائی نہیں دے رہا ہے انہوںنے کہا کہ اگر موسم بہتر نہیں ہوگا تو تاجروں کو شدید نقصان سے دوچار ہونا پڑے گا۔ ( سی این آئی )

تبصرے
Loading...