شملہ معاہدہ اورلاہوراعلامیہ کے تحت بات چیت کیلئے تیار،پاکستان تشدد اور کشیدگی سے پاک ماحول پیدا کرے:بھارت

0 29

سرینگر:بھارت نے کہا ہے کہ جب تک پاکستان بھارت مخالف گروپوں کی سرکوبی کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات نہیں کرتا تب تک پاکستان کے ساتھ بامعنیٰ مذاکرات نہیںکرے گا۔ خارجہ امور کے وزیر مملکت نے کہا کہ بھارت پاکستان کے ساتھ تمام حل طلب مسائل پر بات کرنے کا متمنی ہے تاہم اس کیلئے پہلے پاکستان کو ماحول سازگار بنانا ہوگا۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق بھارت نے کہا ہے کہ جب تک پاکستان کی جانب سے قابل یقین کارروائی نہیں کی جاتی، دہشت گرد ی کی دراندازی کیخلاف بھارت کے موثر اور نتیجہ خیز اقدامات جاری رہیں گے۔خارجہ امور کے وزیر مملکت وی مرلی دھرن نے راجیہ سبھا میں کہا ہے کہ پاکستان کو قابل یقین حد تک دہشت گرد گروپوں کیخلاف کارروائی کا تہہ کرلینا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار پاکستان کیساتھ معمول کے تعلقات چاہتا ہے، اور اس بات کا وعدہ بند ہے کہ تمام تصفیہ طلب معاملات دو طرفہ اور پر امن طور پر شملہ معاہدے اور لاہور اعلامیہ کے تحت حل کرے۔ انہوں نے مزید کہا’’ تاہم بامعنی بات چیت صرف دہشت ، کشیدگی اور تشددسے پاک ماحول میں ہی ممکن ہوسکتی ہے‘‘۔انہوں نے کہا’’ گیند پاکستان کے پالے میں ہے، کہ وہ اس طرح کا ماحول پیدا کرے‘۔انہوں نے کہا’’ بھارت نے پاکستان سے کہا ہے کہ وہ سرحد پار دہشت گردی اور دہشت گردوں کے ڈھانچے کو نتیجہ خیز اقدامات کے ذریعہ منہدم کرے، تب تک بھارت سرحد پار کی جانے والی کارروائی کا جواب دیتا رہیگا کیونکہ دراندازی کرنے والے دہشت گردوں کو پاکستان کی حمایت حاصل رہتی ہے۔انہون نے کہا کہ بھارت کی لگاتار کوششوں سے عالمی سطح پر اس بات کو محسوس کیا گیا ہے کہ پاکستان سے دہشت گردی کی اعانت کی جارہی ہے۔

تبصرے
Loading...