شاہراہ پر ٹیکس عائدکرنے کیخلاف جنوبی کشمیر میں مکمل ہڑتال

ٹرانسپورٹروں کی ہڑتال کی وجہ سے معمولات زندگی متاثر

0 90

سرینگر: شاہراہ پربھاری ٹول ٹیکس عائد کرنے کے خلاف جنوبی کشمیر میں منگوار کو احتجاجی ہڑتال کی وجہ سے عام زندگی متاثر ہوئی جبکہ شوپیاں ، پلوامہ، اننت ناگ اور ضلع کولگام میں ٹرانسپورٹ کی سرگرمیاں معطل رہی جس کی وجہ سے عام زندگی متاثر ہوئی ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق کشمیر شاہراہ پر بھاری ٹول ٹیکس عائد کرنے کے خلاف منگلوار کو جنوبی کشمیر میں ٹرانسپوٹروں نے مکمل ہڑتال کی گئی جس کی وجہ سے وہاںمعمولات زندگی متاثر رہی ۔ معلوام ہوا ہے کہ جنوبی کشمیر میں منگل کو معمولاتِ زندگی متاثر رہی کیونکہ یہاں ٹرانسپورٹر کشمیر شاہراہ پر بھاری ٹول ٹیکس کیخلاف ہڑتال پرہے۔جنوبی کشمیر کے ٹرانسپورٹر کشمیر کی گاڑیوں کو ٹول ٹیکس سے مستثنیٰ رکھنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔واضح رہے کہ اونتی پورہ علاقے میں قائم نئے ٹول پلازا پر اس ماہ کے آغاز سے بھاری ٹول ٹیکس وصولنے کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے جس کیخلاف اہل وادی میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور ہر خاص و عام اس کو ختم کرنے کا مطالبہ کررہا ہے۔اطلاعات کے مطابق ٹرانسپورٹروں کی ہڑتال کی وجہ سے مسافروں کو سخت مشکلات درپیش آئی ہیں۔ریاستی گورنر ستیہ پال ملک نے یقین دلایا ہے کہ معاملہ مرکزی سرکار کیساتھ اْٹھایا گیا ہے اور مقامی گاڑیوں کو ٹیکس سے مبرا قرار دئے جانے سے متعلق احکامات جاری کئے جائیں گے۔یاد رہے کہ کشمیر شاہراہ پر ٹرانسپورٹروں پر بھاری ٹیکس عائد کیا گیا ہے ۔جس کیخلاف ٹرانسپورٹروں کے علاوہ عام لوگوںنے بھی سخت افسوس اور غم وغصے کااظہارکیا ہے ۔

تبصرے
Loading...