سر ینگر بڈ گام نشست پر جمعرات کو ہونے والے انتخابات ،شہر سرینگر ،گاندربل اور وسطی ضلع بڈ گا م میں پولیس وفورسزاہلکا رچوکس

0 99

سرینگر:سر ینگر بڈ گام پارلیمانی نشست پر جمعرات کو ہونے والے والے انتخا با ت کے پیش نظر دوروقبل ہی شہر سرینگر کے ساتھ ساتھ ضلع گاندربل اور وسطی ضلع بڈ گا م میں پولیس وفورسزاہلکا روں کو چوکس کر دیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں سوموار کو شہر سرینگرمیں پولیس وفورسز اہلکا ر انتہا ئی الرٹ نظر آ ئے۔ سی این ایس کے مطا بق ۔سی این ایس کے مطابق18اپریل کودوسرے مرحلے کے انتخابات کے سلسلہ میں سرینگر بڈگام پارلیمانی حلقہ انتخاب میں ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔ اس نشست پرہو نے والی ووٹنگ کے سلسلے میں غیر معمولی سیکورٹی انتظاما ت کئے جا رہے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ سیکورٹی ایجنسیوں کو یہ خدشہ لا حق ہو گیا ہے کہ ان انتخابات سے قبل یا انتخابات کے بعدجنگجو انتخابی عمل میں رخنہ ڈالنے کیلئے کوئی کاروائی انجام دیں گے اور اور ان کا توڑ کرنے کیلئے پولیس اور فورسز کو چوکنا کر دیا گیا ہے۔سرینگر میں انتہا ئی چوکسی جا ری کر کے پو لیس اور نیم فوجی دستوں کو اہم مقامات پر تعینات کر دیا گیا ہے۔ سرینگر اور دیگر حساس قصبہ جات میں نصب کلوز سرکٹ کیمروں کے ذریعے ہر لمحہ نظر گذر کو مزید فعال بنایاگیا ہے۔ پہلے ہی جاری ہائی الرٹ کے تحت پولیس اور سیکورٹی ایجنسیوں کو چوکنا رہنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ اور اس مقصد کیلئے سخت حفاظتی انتظاما ت کے تحت سرینگر اور اس کے گرد نواح میں پولیس اور نیم فوجی دستوں نے گاڑیوں کی چیکنگ اور راہ گیروں کی پوچھ تاچھ کا سلسلہ جاری رکھا جس کے دوران لوگوں کے شناختی کارڈ چیک کئے گئے جبکہ مصروف بازاروں میں گشت کے لئے عام کپڑوں میں ملبوس اہلکاروں کی تعیناتی بھی عمل میں لائی گئی۔شہر خاص میں بھی سیکورٹی کے انتظاما ت کئے جا رہے ہیں۔ ادھر شمال وجنوب کے مختلف اضلاع اور علاقوں سے شہر میں داخل ہو نے کے راستوں پر گا ڑیوں کی با ریک بینی سے تلاشی لی جا رہی تھی اور گا ڑیوں میں سوار مسافروں اور راہگیروں کو ہاتھ اوپر کر کے جا مہ تلاشہ لی جا رہی تھی۔ فورسز نے جگہ جگہ ناکے لگائے اورسکوٹروں سوار مسافروں کو نیچے اتار کر ان کی جامہ تلاشی لی گئی ۔اْدھر سیکورٹی ایجنسیوں نے تمام سیاسی لیڈران ،امیدواروں اور سیاسی سرگرمیوں سے وابستہ کارکنوں کو احتیاط برتنے کے ساتھ ساتھ انہیں معقول سیکورٹی فراہم کرنے کا بھی فیصلہ لیا ہے جس کے تحت کل سے ہی قریب قریب تمام جماعتوں کے لیڈران ،ورکروں اور دیگر کارکنوں کی سیکورٹی کے حوالے سے نئی منصوبہ بندی کی گئی ہے۔اس دوران امن و امان میں کسی بھی قسم کا خلل ڈالنے والوں کے خلاف بھی سخت کارروائی کرنے مکا بھی فیصلہ کیا گیا ہے جس میں علیحدی پسند لیڈران کی نظر بندی میں توسیع اور بالائی زمین بائیکاٹ مہم چلانے والوں کے خلاف بھی سختی برتنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔اس دوران پولیس نے سرینگر بڈگام پارلیمانی انتخاب میں حریت کارکنوں کی پکڑ دھکڑ اور ان کے خلاف آپریشن وسیع کیا جا رہا ہے جس کے تحت پچھلے ایک ہفتے سے درجنوں حریت لیڈران ،کارکنوں اور ان کے حامیوں کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے۔انتخابات کو پر امن طور پر انجام دینے کیلئے مزاحمتی نوجوانوں اور کارکنوں کے علاوہ مشتبہ افراد کی گرفتاریاں بھی جاری ہیں ۔

تبصرے
Loading...