دفعہ 370پر بی جے پی کا موقف واضح ، اسکو ہٹانے کے فیصلہ پر پارٹی وعدہ بند

جموں کشمیر میں اسمبلی انتخابات سال رواں کے آخر تک منعقد کرانے کی الیکشن کمیشن سے اپیل کی /رام مادھو

0 21

سرینگر: ریاست جموں کشمیر سے دفعہ 370کو ختم کرنے کے وعدے پر کار بند ہے کی بات کرتے ہوئے بی جے پی کے قومی جنرل سیکرٹری رام مادھو نے کہا کہ ریاست جموں کشمیر میں ان کی پارٹی اسمبلی انتخابات کیلئے تیار ہے اور بی جے پی الیکشن کمیشن آف انڈیا کو اپیل کرتی ہے کہ سال رواں کے آخر تک ریاست جموں کشمیر میں اسمبلی انتخابات منعقد کرائے ۔ سی این آئی مانیٹرنگ کے مطابق جموں میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بی جے پی کے جنرل سیکرٹر ی رام مادھو نے ایک مرتبہ پھر واضح کر دیا کہ ریاست جموں کشمیر سے دفعہ 370کو ہٹانے کیلئے ان کی پارٹی وعدہ بند ہے اور پی جے پی کا اس پر موقف واضح ہے ۔ پریس کانفرنس کے دوران رام مادھو نے حریت کانفرنس کی نقطہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ وہ بات چیت کے بارے میں اپنی رائے دینے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔ رام مادھو نے کہا”حریت اس پوزیشن میں بالکل نہیں ہے کہ وہ حکومت کو بات چیت کے بارے میں رائے دے سکے۔دو سال قبل حکومت نے حریت کو بات چیت کی پیشکش کی تھی اور اس کیلئے خصوصی مذاکرات کار کی تعیناتی بھی عمل میں لائی گئی تھی لیکن حریت تب تیار نہیں ہوئی۔اب وہ بات چیت کے وقت کے بارے میں کوئی رائے نہیں دے سکتے ہیں”۔رام مادھو نے دفعہ 370کے بارے میں پارٹی مؤقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ مودی سرکار اْن سب پرویڑنز کو ختم کرنے کیلئے وعدہ بند ہے جن کے ذریعے جموں کشمیر کو خصوصی پوزیشن حاصل ہے۔انہوں نے کہا”جہاں تک دفعہ370کا تعلق ہے ہم فکری طور وعدہ بند ہیں کہ اس کو ختم کریں گے۔ ریاست جموں کشمیر میں اسمبلی انتخابات کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں مادھو نے کہا کہ بھاجپا ریاست جموں کشمیر میں اسمبلی انتخابات کیلئے تیار ہے اور ہماری پارٹی الیکشن کمیشن سے جموں کشمیر میں سال کے آخر تک اسمبلی انتخابات منعقد کرنے کی اپیل کررہی ہے۔

تبصرے
Loading...