تین برس کی معصوم بچی کی نعش دریائے جہلم سے برآمد

بچی گذشتہ 10دنوں سے لاپتہ تھی، پولیس نے معاملے کی تحقیقات شروع کی

0 88

سرینگر/: اننت ناگ میں تین سالہ لاپتہ بچی کی نعش کو دریائے جہلم سے برآمد کیا گیا ۔ پولیس نے نعش کو اپنی تحویل میں لیکر ضروری لوازمات کے بعد ورثاء کے حوالی کی ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق کھنہ بل اننت ناگ میں عبدواحد بجاڑ کی دختر 3سالہ نصرت جان 2مئی کو اچانک لاپتہ ہوئی مذکورہ بچی کے گھر والوںنے پولیس سٹیشن میں بچی کے لاپتہ ہونے کی رپورٹ بھی درج کروائی تاہم بچی کی بسیار تلاش کے باوجود ا س کا کہیں پر اتہ پتہ نہیں چلا ۔ اس دوران آج مقامی لوگوںنے مذکورہ بچی کی نعش کو دریائے جہلم پر تیرتے ہوئے پایا اور فوری طور پر پولیس کو مطلع کیا گیا چنانچہ لاش کو فوری طور پر باہر نکالا گیا اور ضروری لوازمات کے بعد ورثا ء کے حوالے کی گئی ۔ بتایا جاتا ہے کہ کھیلتے ہوئے بچی کا پیر پھسل گیا ہوگا اور اور دریائے جہلم میں گرکر ڈوب گئی تھی اور آج وہ باہر آئی ۔ ذرائع سے معلوم ہانجی دانتر اننت ناگ میں مذکورہ کنبہ عارضی طور پر رہائش پذیر ہے اور ان کی بچی رواں ماہ کے ابتدائی دنوں اچانک لاپتہ ہوئی تھی اور شائد اس کا پیر پھسل کیا گیا تھا جس کی وجہ سے وہ دریائے جہلم میں ڈوب کر لقمہ اجل بن گئی تاہم پویس اس سلسلے میں تحقیقات کررہی ہے۔

تبصرے
Loading...