تیجسوی نے سرکردہ لیڈروں کو لکھا خط، کہا ‘کچھ چینلوں کا بائیکاٹ کرنے کی ضرورت’

بہار کے سابق نائب وزیر اعلیٰ اور آر جے ڈی لیڈر تیجسوی یادو نے اپوزیشن پارٹیوں کے لیڈران کو ایک خط لکھا ہے جس میں انھوں نے ایسے ٹی وی چینلز کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی ہے جو بی جے پی کے طے ایجنڈے کے تحت بڑے ایشوز پر پردہ ڈالنے کا کام کر رہے ہیں۔ اس خط میں تیجسوی یادو نے لکھا ہے کہ ”ساتھیو! ایک طرف جہاں ہم بھکمری، بے روزگاری، کسان اور سماجی انصاف سے جڑے ایشوز اٹھا رہے ہیں، تو وہیں اصل دھارے کی میڈیا کا ایک بڑا حصہ بی جے پی ہیڈ کوارٹر کے ذریعہ طے کردہ ایجنڈے کے تحت ان بڑے ایشوز پر پردہ ڈالنے کا کام کر رہا ہے۔ آئیے ہم اجتماعی طور پر ان چینلوں کا بائیکاٹ کرنے کا فیصلہ لیں۔”

View image on TwitterView image on TwitterView image on TwitterView image on Twitter

Tejashwi Yadav

@yadavtejashwi

साथियों! एक तरफ जहाँ हम भुखमरी, बेरोजगारी, किसान और सामाजिक न्याय से जुड़े मुद्दे उठा रहे हैं वहीँ मुख्यधारा की मीडिया का एक बड़ा वर्ग BJP मुख्यालय द्वारा तय अजेंडे के तहत इन सरोकारों पर पर्दा डाल रहा है। आइए हम सामूहिक रूप से उन चैनलों का बहिष्कार करने का निर्णय लें…

تیجسوی یادو نے یہ خط بہار اسمبلی کے لیٹر ہیڈ پر لکھ کر بھیجا ہے۔ تیجسوی نے اس خط کو کانگریس صدر راہل گاندھی، بی ایس پی سپریمو مایاوتی، یو پی کے سابق وزیر اعلیٰ اکھلیش یادو، بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی سمیت کئی لیڈروں کو بھیجا ہے۔ تیجسوی نے اس خط کی کاپیاں یو پی میں بی جے پی کی معاون اوم پرکاش راجبھر، دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال، بہوجن سماج پارٹی کی صدر مایاوتی، آندھرا پردیش کے وزیر اعلیٰ چندرا بابو نائیڈو، تلنگانہ کے وزیر اعلیٰ چندرشیکھر راؤ، شرد پوار، سیتا رام یچوری، ایچ ڈی دیوگوڑا، دیپانکر بھٹاچاریہ، اجیت سنگھ، اوپیندر کشواہا، بدرالدین اجمل، اسدالدین اویسی، جیتن رام مانجھی، ہیمنت سورین، اوم پرکاش چوٹالہ اور بابو لال مرانڈی کو بھی بھیجی ہیں۔
تبصرے
Loading...