بی جے پی کا ایئر اسٹرائک کو انتخابی تشہیر کا ذریعہ بنانا قابل مذمت/شیوسینا

57

مودی سرکار نے سرجیکل سٹرایک کو اپنے انتخابی مفاد کیلئے استعمال کیا

سرینگر: ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی پر ائر سٹرائک کو انتخابی تشہیر کا ذریعہ بنانے کا الزام لگاتے ہوئے بی جے پی کا دایاں ہاتھ مانے جانے والی پارٹی شیوسینا نے کہا ہے کہ فوجی کارروائیوں اور فوج کو انتخابات کیلئے استعمال کرنا قابل مذمت ہے ۔ ریاست کے سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے بھی مودی سرکار پر الزام عائدکیا تھا کہ بھارتی فضایہ کی کارروائی کو انتخابی مہرا بنایا جارہا ہے اور سرجیکل سٹرائک انتخاب جیتنے کیلئے ایک پلے کارڈ کے بطور استعمال کی جارہی ہے ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق ریاست کے وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبدالہ نے مودی سرکار پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ فضائی کی جانب سے بالاکوٹ میں کی گئی سٹرائک کو انتخابی تشہیر کیلئے استعمال کررہی ہے ۔ جس کے بعد اب بھارتیہ جنتا پارٹی کا دایاں ہاتھ مانی جانی والی پارٹی شیو سینا نے بھی صا ف طور پر مودی سرکار پر الزام لگایا ہے کہ بی جے پی اپنی انتخابی جلسوں میں سرجیکل سٹرایک اور فوجی وردی کا استعمال کررہی ہے ۔ شیوسینا نے ہندوستانی فضائیہ کے ایئر اسٹرائک کو انتخابی تشہیر کا ذریعہ بنانے پر بی جے پی کی مذمت کی ہے۔ شیو سینا نے پارٹی کے اخبار سامنا کے اداریہ میں بی جے پی سمیت ان سیاسی پارٹیوں کی مذمت کی ہے جو اس طرح کی تشہیر کے ہتھکنڈے اختیار کر رہی ہیں۔ جو سیاسی پارٹیاں فوجیوں کی وردی اور فوٹو کا استعمال ووٹ حاصل کرنے کے لیے کر رہی ہیں وہ انہی اپوزیشن پارٹیوں کی طرح مجرم ہیں جو فضائیہ کی کاروائی کا ثبوت طلب کر رہی ہیں۔اداریہ میں مثال کے طور پر بی جے پی کے رہنما منوج تیواری کے سلسلے میں لکھا ہے کہ وہ فوجیوں کی طرح وردی پہن کر پورے یقین سے کہتے ہیں کہ بی جے پی ہی الیکشن جیتے گی۔ سیاسی مفاد کے لیے فوج کی وردی کا استعمال کرنا مناسب نہیں ہے۔سی این آئی کے مطابق اداریہ میں کہا گیا ہے کہ تیواری نیامداد کرتے ہوئے فوج کی وردی میں جو تصویریں شائع کی ہیں وہ اپوزیشن کے الزام کو تقویت پہنچاتا ہے کہ بالا کوٹ ایئر اسٹرائک سیاسی مفاد کے لیے کیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ پاکستان کے جنگی طیارے کو مار گرانے والے فضائیہ کے ونگ کمانڈر ابھینندن کی تصویروں کا استعمال انتخابی تشہیرکے طور پر کیا جا رہا ہے۔ ان تشہیری ذرائع سے بتایا جارہا ہے کہ مرکز میں بی جے پی کی حکومت ہونے کی وجہ سے ہی پلوامہ حملے میں شہید جوانوں کا بدلہ لینا ممکن ہو پایا۔

تبصرے
Loading...