بھارت علاقائی امن کی خاطرمذاکرات کی میزپرآئے ، جنگ سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوگا

کشمیری اپنے حق خودارادیت کے حصول کیلئے بر سر جدوجہد، طاقت کے بل پر انہیں دبایا نہیں جا سکتا / قریشی

0 84

سرینگر// پاکستانی وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے بھارت پرزوردیاہے کہ وہ عام انتخابات کے بعدنئی حکومت کے برسراقتدارآنے پرعلاقائی امن کی خاطرپاکستان کے ساتھ مذاکرات کی میزپرآئے۔ انہوں نے کہاکہ جنگ سے ہمیشہ تباہی آتی ہے اور خصوصاً جب دونوں ملکوں کے پاس ایٹمی طاقت ہوتواس بارے میں سوچابھی نہیں جاسکتا۔سی این آئی مانیٹرنگ کے مطابق پاکستا ن ٹیلی ویڑن سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ جنگ سے ہمیشہ تباہی آتی ہے اور خصوصاً جب دونوں ملکوں کے پاس ایٹمی طاقت ہوتواس بارے میں سوچابھی نہیں جاسکتا۔پاکستانی وزیرنے افسوس ظاہر کیاکہ کشمیرجل رہاہے کیونکہ بھارت اپنی فوج اورکالے قوانین کے ذریعے کشمیریوں کی آوازدبانے کی کوشش کررہاہے۔انہوں نے کہاکہ الیکٹرانک میڈیااورانٹرنیٹ کے جدیددورمیں کشمیریوں کی آوازکودبایانہیں جاسکتا۔شاہ محمودقریشی نے کہاکہ یورپی کمیشن اوراقوام متحدہ نے دوٹوک الفاظ میں کہاہے کہ کشمیری اپنے حق خودارادیت کے حصول کے لئے جدوجہدکررہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ بھارتی جاسوس کلبھوشن جادھو نے پاکستان میں تخریبی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کااعتراف کیاہے۔ انہوں نے کہاکہ بھارت اس کی رہائی چاہتاہے تاہم اس پرپاکستانی قوانین کے تحت مقدمہ چلایاجائے گا۔پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے مابین کشیدگی کی بڑی وجہ مسئلہ کشمیر ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کوکشمیر کا مسئلہ حل کرنا ہے کیونکہ کشمیرمیں جوکچھ بھی ہورہا ہے وہ وہاں کے لوگوں کا ردِ عمل ہے، اس کا الزام پاکستان پرعائد کیا جائے گا اورہم ان پر الزام عائد کریں گے تو کشیدگی بڑھے گی جس طرح ماضی میں بڑھتی تھی۔ قریشی نے کہا کہ ہم اپنے اختلافات کو مذاکرات کے ذریعے حل کریں اوردونوں ممالک کے درمیان صرف ایک اختلاف ہے جوکہ کشمیرہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ہمیشہ علاقائی امن کیلئے تعمیری کردارادا کرنے کے لئے تیار رہاہے اوراس نے اس سلسلے میں متعدداقدامات کئے ہیں۔( سی این آئی

تبصرے
Loading...