آونیورہ شوپیان میں شبانہ خونین معرکہ آرائی ،انصار غزۃ ہند سے وابستہ دو مقامی جنگجو جاں بحق

ہڑتال اور بارشوں کے باوجود دونوں مقامی جنگجو آبائی علاقوں میں سپرد خاک ، تجہیز و تکفین میں ہزاروں لوگوں کی شرکت

0 22

سرینگر/ جنگجوئوں کے خلاف آپریشن آل آوٹ میں تیزی کے بیچ پہاڑی ضلع شوپیان کے آونیورہ علاقے میں فورسز اور جنگجوئوں کے مابین شبانہ مسلح تصادم آرائی میں انصار غز ۃ ہند نامی عسکری تنظیم سے وابستہ دو مقامی جنگجو جاں بحق ہو گئے ۔جھڑپ کے دوران ہی علاقے میں فورسز اور مظاہرین کے درمیان پُر تشدد جھڑپوں کے دوران ٹیر گیس شلنگ کے باعث کئی مظاہرین زخمی ہو گئے ۔ادھر جھڑپ میں جاں بحق ہوئے جبکہ انتظامیہ نے افواہوں کی روکتھام کیلئے ضلع شوپیان میں موبائیل انٹر نیٹ خدمات معطل کی ۔ ادھر بارشوں اور مکمل ہڑتال کے بیچ دونوں مقامی جنگجوئوں کو آبائی علاقوں میں سپرد خاک کیا گیا جبکہ تجہیز و تکفین میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی ۔ سی این آئی کے مطابق شوپیان کے آونیورہ زینہ پورہ نامی علاقے میں دو جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد فوج ، فورسز ، سی آر پی ایف اور ایس اوجی شوپیان نے سوموار اور منگل کی درمیانی رات کو علاقے کا محاصرے میں لیکر تلاشی کارروئی شروع کی ۔ ذرائع نے بتایا کہ علاقے میں اس وقت گولیوں کی گن گرج سنائی دی جب تلاشی آپریشن کے دوران ایک رہائشی مکان میں محصور جنگجوئوں نے فرار ہونے کی کوشش میں اندھا دھند فائرنگ کی جس کے ساتھ ہی فورسز نے بھی مورچہ زن ہوکر جوابی کارورائی کی اور طرفین کے مابین گولیوں کا تبادلہ شروع ہوا ۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ علاقے میں کئی گھنٹوں تک فورسز اور جنگجوئوں کے مابین فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا اور جونہی علاقے میں گولیوں کا تبادلہ تھم گیا تو وہاں جھڑپ کے مقام سے دو جنگجوئوں کی نعشیں بر آمد ہوئی جن کی شناخت سیار احمد بٹ ولد ثنا اللہ ساکنہ ماچھوا کولگام اور شاکر احمد وگے ساکنہ اونیورہ کے بطور ہوئی ہے جبکہ دونوں جنگجوئوں کا تعلق انصار غزوۃ الہند نامی عسکری تنظیم سے تھا ۔پولیس نے جھڑپ میں دو جنگجوئوں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دونوں جنگجو پولیس و فورسز کو کئی کیسوں میں انتہائی مطلوب تھے ۔ پولیس بیان کے مطابق پولیس و فورسز نے نے جنگجوئوں کی موجودگی کی مصدقہ اطلاع کے بعد آونیرہ گائوں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا جس کے دوران چھپے جنگجوئوں نے فورسز پر فائرنگ کرکے فرار ہونے کی کوشش کی تاہم اْن کی یہ کوشش ناکام بنائی گئی اور جوابی کارروائی میں دو جنگجوئوں کو جاں بحق کیا گیا۔اور دونوں جنگجو انصار غزوۃ الہند نامی عسکری گروہ کے ساتھ وابستہ تھے۔ ادھر معلوم ہو ا ہے کہ علاقے میں جھڑپ کے ساتھ ہی نوجوانوں کی ٹولیوں نے سڑکوں پر نکل کر احتجاجی مظاہرے کئے جس دوران مظاہرین نے فورسز پر سنگبازی کی جس کے جواب میں فورسز نے مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے لاٹھی چارج اور ٹیر گیس شلنگ کا استعمال کیا ۔ ادھر جھڑپ میں دو مقامی جنگجوئوں کے جاں بحق ہونے کی خبر جونہی پھیل گئی تو شوپیان کے مختلف علاقوں میں ہڑتال ہوئی جبکہ لوگوں کی بڑی تعداد نے دونوں مہلوک جنگجوئوں کے آبائی علاقوں کا رخ کیا ۔ معلوم ہوا ہے کہ جونہی دونوں جاں بحق جنگجوئوں کی نعشیں جو نہی آبائی علاقوں میں پہنچائی گئی تو وہاں صف ماتم بچھ گئی جس دوران ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے مہلوک جنگجوئوں کے آبائی علاقوں کا رخ کیا اور وہاں ان کا نماز جنازہ ادا کیا گیا ۔ جھڑپ میں دوجنگجوئوں کی ہلاکت کے خلاف ضلع شوپیان کے بیشتر علاقوں میں مکمل ہڑتال کے باعث معمول کی زندگی متاثر رہی جبکہ ضلع میں موبائیل انٹر نیٹ خدمات بھی معطل رہی ۔

تبصرے
Loading...