اننت ناگ حملے میں پانچ سی آر پی ایف اہلکاروں کی ہلاکت افسوسناک

جنگجوئوں کیخلاف کامیاب کارروائیاں کے بعد سرحد پار سے جنگجوئوں کو فدائی حملہ کرنے کی ہدایت ملتی ہے /گورنر

0 16

سرینگر/13جون/سی این آئی// جنوبی ضلع اننت ناگ میں جنگجوئوں کے حملوں میں پانچ سی آر پی ایف اہلکاروں کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ریاستی گورنر ستیہ پال ملک نے کہا کہ اننت ناگ میں ہوئے حملے میں پاکستان براہ راست ذمہ دار ہے اور یہ حملہ بھی پاکستان کے کہنے پر ہوا ۔ سی این آئی کے مطابق ریاست جموں کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے اننت ناگ میں جنگجوئوں کے ایک حملے میں پانچ سی آر پی ایف اہلکاروں کی ہلاکت پر شدید رنج و غم کا اظہار کیا ہے ہلاک شدگان کے گھروالوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا۔گورنر نے اس حملے کو بزدلانہ قرار دیتے ہوئے کہا” جب بھی فورسز کی مدد سے الیکشن کامیابی سے انجام دئے جاتے ہیں یا جنگجوئوں کیخلاف کامیاب کارروائیاں کی جاتی ہیں تو سرحد کے دوسری طرف سے جنگجوئوں کو آرڈر ملتے ہیں کہ وہ کوئی فدائی حملہ کریں۔ شیر کشمیر انٹرنیشنل کنونشن کمپلیکس میں منعقدہ ایک تقریب کے حاشئے پر ستیہ پال ملک نے نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا: ‘جب یہاں فورسزکے ہاتھ بھاری پڑجاتے ہیں تو پار سے فدائین حملے کی ہدایات آتی ہیں، یہ فدائین حملہ تھا، یہ کوئی معمولی حملہ نہیں تھا، لیکن میں اس حملے میں ملوثین کو کہنا چاہتا ہوں کہ ہمارے ارادوں پر اس کا کوئی اثر نہیں پڑے گا، ہم ان کو ختم کرکے ہی دم لیں گے’۔انہوں نے کہا کہ جب بھی یہاں حالات سدھرتے ہیں تو ایسے حالات پیدا کئے جاتے ہیں۔گورنر موصوف نے اننت ناگ حملے کو پاکستان کی سازش قرار دیتے ہوئے کہا: ‘یہ پاکستان کی سازش ہے یہاں پاکستان کے حکم سے فدائین حملے ہوتے ہیں، فدائین حملے یہاں کی کسی تنظیم کے نہیں ہوتے ہیں’۔امرناتھ یاترا کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا: ‘یہ حملہ یاترا کے روڑ پر ہوا ہے لیکن یاترا کے لئے فول پروف سیکورٹی ہوگی اور اس کے نزدیک کسی کو جانے نہیں دیں گے۔ (سی این آئی )

تبصرے
Loading...